شہداء کے خون کی قیمت

سابق وفاقی وزیر ڈاکٹر عاصم کو سندھ پولیس کے ”تفتیشی“ افسر اعلیٰ نے بے قصور قرار دے دیا۔ گویا ” 90 “دن کی رینجرز کی تفتیش بیکار ”ثابت“ ہوئی اور  ”4“ دن کی پولیس کی تفتیش اتنی ”کارگر“ ثابت ہوئی۔
کیا کہنے اس نظام ، سیاست، پولیس اور تفتیش کے!
مجھے اس تفتیشی افسر پر حیرت ہے جس کی فورس کے جوان اس جنگ میں صفِ اول میں اپنی جانوں کے نذرانے پیش کر رہے ہیں اور ایسے افسران اور سیاسی لوگ ان شہداء کے خون کو اس بے حسی سے مٹی میں ملا رہے ہیں۔ ڈاکٹر عاصم ملزم ہیں، ان کو اپنے دفاع کا بھرپور موقع دیں مگر اپنے شہداء کے خون کی حُرمت کو یوں تو مت بیچیں۔ حکومتی پارٹی کے ارکان نے اس معاملے پر جو دلائل دیے وہ اتنے بودے ہیں کہ ان پر صرف ہنسا جا سکتا ہے۔ مثلاً پورے پاکستان کو یہ بتایا گیا ہے کہ قانون کے کسی مجرم کو اب کسی خوف اور ڈر کے بنا اپنا علاج کسی بھی ڈاکٹر، کلینک یا ہسپتال سے کروانے کی مکمل ”آزادی“ ہے۔ کوئی ڈاکٹر قانون کو آگاہ کیے بغیر کسی بھی مجرم کا علاج معالجہ کر سکتا ہے، کھلی آزادی ہے سب کو۔ جنگل کا قانون مبارک ہو پاکستانیو! ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔شاباش!

Dr-Asim Ummat-2

Dr-Asim Ummat-1

Advertisements

Tagged: , , , , , , , , , ,

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: